Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

شیر ابن شیر عثمان شہید رحمۃ اللہ علیہ (نظم ۔ پروفیسر انور جمیل)

شیر ابن شیر عثمان شہید رحمۃ اللہ علیہ

وہ شیر ابن شیر تھا ، ملت کی آن تھا

شیر افگنی قبیلے کی جرأت کی شان تھا

وہ تھا عظیم نسبتوں کا وارث اور امین

اَزہر کی ، اِبراہیم کی ، دادا کی جان تھا

حافظ تھا اور قاریٔ قرآن ، نیک بخت

معصوم وفاؤں کی عجب داستان تھا

کم سن تھا ، اِستقلال میں اپنی مثال آپ

سیلِ سپاہِ ہند کے آگے چٹان تھا

تگنی کا ناچ پہروں نچایا غنیم کو

بنئے کی فوج پر وہ سخت امتحان تھا

زخموں سے چُور تھا مگر دہشت بنا رہا

دشمن کو ذرا بھی نہیں جس کا گمان تھا

ماہر سنائپر کے تھا فن میں کمال وہ

یوں لشکرِ ہنود پہ ہیبت نشان تھا

توڑی خود اپنی تیغ شہادت سے پیشتر

وہ غیرت ایماں کا صحیح ترجمان تھا

طلحہ کا یار تھا تو برادر تھا عمر کا

وہ اپنے خاندان کا رعنا جوان تھا

اس دور کے معاذ اور معّوذ یہی تو ہیں

انورؔ کہاں عدو کو یہ پہلے گمان تھا

(پروفیسر انور جمیل)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor